“ان کہی باتیں”

کچھ باتیں ان کہی رہنے دو……
کچھ باتیں ان کہی ان سنی اچھی!
اُنکا حسن،انکا طلسم،انُکے نہ کہنے میں ہی پوشیدہ!
اگر کہہ دیا جائے تو انُکا طلسم ٹوٹ جاتا ہےاور سننے والا جادوئی دنیا سے باہر آجاتا ہے،جس میں جی رہا ہوتا ہے۰
ہم اکثر ان کہی باتوں کے سحر میں گرفتار ہو کے اپنی ایک دیومالائی دنیا تخلیق کر لیتے ہیں اوراُس طلسم ہوش ربا سے باہر آنا بھی نہیں چاہتے۰۰۰۰ہم کسی کے طرزِعمل سے اپنے اپنے مطلب کا مفہوم اَخذ کر لیتے ہیں اور اُسی خیالی دنیا میں جینا چاہتے ہیں!
بعض اوقات ہم چاھتے ہوئے بھی دوسروں کو اپنے جذبات و احساسات بیاں نہیں کر پاتے۰
انسانی جذبات بھی عجب شے ہیں ۰۰۰۰۰جذبات کو انکی اصل روح اور شدت کے ساتھ بیان کرنا ناممکن!
اگر کوئی بیاں کرنے کی کوشش بھی کرے تو دوسرے کے لئیے ان جذبات کو سمجھنا انتہائی مشکل کام!
اصل میں دوسرے کے جذبات کو سمجھنے کے لئے احساسات کی اصل بلندی کو چھونا لازمی !
سچے جذبوں اور ان کہی باتوں کو سمجھنے کے لئے دماغ کی نہیں دل کی ضرورت ہوتی ہے،ایک ایسا دل جو دیکھ سکے۰۰۰۰۰جان سکے۰۰۰۰۰ اور احساسات کو پہچان سکے۰۰۰۰۰۰بنا کسی کے بولے سُن سکےاور شاید بول بھی سکے۰۰۰۰۰۰۰۰!
(ابنِ آدم)

Advertisements
This entry was posted in ان کہی باتیں. Bookmark the permalink.

One Response to “ان کہی باتیں”

  1. Pingback: “ان کہی باتیں” – ibneadamsite

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s