بارش میں گُھلتے آنسو

دل دہلانے والی آواز کے ساتھ بجلی چمکی اور میرے سامنے کا منظر منّور ہوگیا۔ میں دیکھ سکتا تھا ،آسمان سے تیزی سے ایک کے پیچھے ایک گرتی بارش کی بوندیں ۰۰۰۰۰
جیسےکسی ٹوٹی مالا کے موتی۰۰۰۰۰
ایک ساتھ گر کر فنا ہونا منظور۰۰۰۰۰
مگر ایک دوسرے کا ساتھ چھوڑنا گوارا نہیں!
میں نے چہرے پہ بہتےبارش کے پانی کو اپنی بھیگی آستین سے صاف کرنے کی ناکام سی کوشش کی۔میں کافی دیر سے ٹیرس پہ بیٹھا بارانِ رحمت میں تِتر بِتر تھا۔
کل شام سے جیسے آسمان والے کوبنجر زمین کی سسکیوں اور خشک ہوتے ہوئے پیڑوں کی آہ پر ترس آگیا تھا اور اُس نے اپنے ابرِ رحمت کے در کھول دئیے تھے،،،پانی تھا کہ تھمنے کا نام ہی نہیں لے رہا تھا،،،،نظامِ زندگی مفلوج ہو کر رہ گیا تھا۔وہ لوگ جو کل بارانِ رحمت کے لئیے دعاگو تھے،آج بارش رکنے کی دعائیں کر رہے تھے۔
“واہ رے انسان کبھی خوش نہ ہونا۰۰۰۰۰”
میرے ذہن میں جھماکے ہونے لگے۰۰۰۰کسی کی یاد کی گھٹا ان الفاظ کے ساتھ اُمنڈ آئی اور میرے آنسو بارش کے پانی میں اضافہ کرنے لگے۔
انسان بھی کتنا عجیب ہے،کبھی کبھی تو ہزاروں کے مجمع میں تنہا اور کبھی کسی ایک کے ساتھ اتنا مگن کہ ہزاروں کے ہونے کی پرواہ نہیں۰۰۰۰۰
کچھ ایسا ہی ساتھ میرا اور اُسکا بھی تھا،،،،پہروں ہم اک دوسرے کے ساتھ گذار دیتے،،،گھنٹوں باتیں کرنے کے بعد بھی جب میں اپنی تشنگی کا اظہار کرتا تو وہ شکایتی لہجے میں کہتی”کبھی خوش نہ ہونا” اور میں مُسکرا دیتا۔ ہمیں ایک دوسرے کا ساتھ عزیز تھا،جتنا بھی،،،،جہاں تک ممکن۔
کہتے ہیں وقت کبھی ایک سا نہیں رہتا،،،،ہر ملن کا مقدر جدائی ہے ،،،انسان ہار جاتا ہے،،،،کھو دیتا ہے،،،،،اپنوں کو،،،،،اپنے پیاروں کو
مجبور۰۰۰۰۰بے بس۰۰۰۰
کبھی حالات سے۰۰۰۰۰
کبھی قدرت کے ہاتھوں۰۰۰۰
اور کبھی کسی کے پیار میں اُسکو چھوڑ دینا بہتر۰۰۰
ایک رُک جاتا ہے اور دوسرا آگے بڑھ جاتا ہے،،،قدم بقدم دوری۰۰۰۰۰۰۰۰۰۰
سو میں بھی رُک گیا تھا اور آج بھی اُسی پل میں جی رہا تھا،،،،وہی لمحات،،،،وہی حاصل ِ زیست
میں ایک دوسرے کے ہاتھوں میں ہاتھ ڈالے،بادش کی بوندوں کو فنا ہوتے دیکھ رہا تھا ،،،،،رشک کر رہا تھا
کاش ہم بھی کسی مالا کے موتی ۰۰۰۰کسی بارش کی بوندیں ہوتے
ایک ساتھ۰۰۰۰۰
ساتھ ساتھ۰۰۰۰

(ابنِ آدم)

 

Advertisements
This entry was posted in بارش میں گُھلتے آنسو. Bookmark the permalink.

6 Responses to بارش میں گُھلتے آنسو

  1. Anonymous says:

    Awesome…..

    Like

  2. Anonymous says:

    Kash

    Like

  3. Anonymous says:

    Suno ibne adam
    Kya is be nsm taluq ka koi anjam hy?

    Like

  4. Anonymous says:

    Suno ibne adam
    Kya is benam taluq ka koi anjam hy?

    Like

  5. Anonymous says:

    Lagay hoey ho na
    Mjhy bhol jany main
    Masoom si dua hy
    Nakam raho tum

    Like

  6. Anonymous says:

    Chupky chupky
    Dy jaty hn
    Gehry rog
    Sunehry log

    Like

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s