محبت جیت جاتی ہے

ہلکی ہلکی بوندا باندی نے جنوری کی اس سردصبح میں کچھ اور خنکی گھول دی تھی-ہر طرف گہری دُھند کا راج تھا-سورج لاکھ کوششوں کے باوجود اس دبیز دھند کا پردہ چاک کر اپنا جاہ و جلال دکھانے سے قاصر تھا-اور بالآخر اس نے سرمئی بادلوں کے پیچھے منہ چھپانا غنیمت جانا-

ہم کافی دیر سے ساتھ ساتھ چل رہے تھے،ہر طرف اک خوشگوار سی مہک چھائی ہوئی تھی-ہمارے اطراف میں دلفریب ہریالی اور قریب ہی اک چھوٹی سی جھیل میں سرگوشیاں کرتے پرندے ،،،ماحول کی رومانیت میں اضافہ کر رہے تھے-

مگر میں ہر طرف سے لاتعلق،سر جھکائے اسکے حسین قدموں پر نظر جمائے،خاموشی سے قدم بہ قدم اسکے ساتھ چل رہا تھا اور ساتھ ساتھ اسکے وجود کی مہک اپنی سانسوں بسانے کی تگ و دو میں مصروف تھا-میں چاہتا تھا کہ ان حسین لمحات کے حسن کا اک اک قطرہ آبِ حیات کی مانند پی جاؤں۔

           میں اس پل میں مکمل جینا چاہتا تھا،ہر اک پل سے اسکی وابستگی کا احساس چرانا چاہتا تھا-میں اُس اطمینان کو محسوس کرنا چاہتا تھا جو اسکے وجود کے میرے ساتھ ہونے سے مجھے مل رہا تھا-

بعض اوقات ہماری زندگی میں کسی ایک کا ہونا بہت اہمیت رکھتا ہے،،،کوئی ایک جو بہت اپنا ہو،،،جس سے ہم اپنا ہر دکھ درد شیئر کرسکیں،،،جس پر ہمیں خود سے زیادہ بھروسہ ہو،،،،ہم سمجھتے ہوں کہ وہ ایک ہمارے ہر درد کا مداوا ہے-ہماری ہر مصیبت کے آگے کسی دیوار کی مانند کھڑا ہے،،،جب تک وہ ہے،ہمیں زندگی کے کسی موڑ پر نہ بکھرنے دے گا اور نہ گرنے دے گا-کچھ ایسا ہی مجھے اسکے ساتھ سے محسوس ہو رہا تھا،،،اگر وہ ساتھ ہے تو سب کچھ ہے،،،،ورنہ کچھ بھی تو نہیں۰۰۰۰۰۰

    ہم کافی دور نکل آئے تھے،مجھے معلوم تھا کہ دیر ہوچکی ہے اور اسکو یقیناً چائے کی طلب ہوگی،کبھی کبھی انسان محبت میں خودغرض ہوجاتا ہے اور میں بھی شاید ان لمحات کو زیادہ سے زیادہ طول دینا چاہتا تھا،مگر محبت خودغرضی پہ غالب آجاتی ہے،،،،،

میرے خیال میں چائے پی لینی چاہئیے،،،

میں نے خاموشی کا سحر نہ چاہتے ہوئے بھی توڑتے ہوئے کہا،،،

جواباٗ اس نے اپنی حسین آنکھوں سے اثبات میں اشارہ کرتے ہوئے مجھے مُسکرا کے دیکھا،،،جیسے کہہ رہی ہو

دیکھو محبت جیت گئی نا

میں بھی بے ساختہ مُسکرا پڑا اور ہمارے قدم کینٹین کی جانب بڑھنے لگے۰۰۰۰۰۰۰

(ابنِ آدم)

Advertisements
This entry was posted in محبت جیت جاتی ہے. Bookmark the permalink.

5 Responses to محبت جیت جاتی ہے

  1. Samia says:

    Bohhtttt khubsurattttt. Manzar pesh liya hai ap k haseen lafzoo NE.

    Like

  2. Anonymous says:

    Kash mohabat jeet skti.shayad yeh azeyat ka dosra nam hy.

    Like

  3. Zehra says:

    Superb yaar as always…love to read it again and again…I feels kay I am there…lovely scene creation..you have magical words..:)

    Like

  4. Anonymous says:

    Awesome….Dil kar raha tha kay eh walk khabhi khatam na ho, aur app apnay dil kay jazbaat ko alfaaz ka rang detay rehaein ….kuch jadoo hay appkay alfaaz may, jo readers par apna asar chore jata hy…

    Like

  5. Arzoo Ali says:

    Very nice!

    Like

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s